(Zarb-e-Kaleem-041) (مردان خدا) Mardan-e-Khuda

مردان خدا

وہی ہے بندئہ حر جس کی ضرب ہے کاری
نہ وہ کہ حرب ہے جس کی تمام عیاری

ازل سے فطرت احرار میں ہیں دوش بدوش
قلندری و قبا پوشی و کلہ داری

زمانہ لے کے جسے آفتاب کرتا ہے
انھی کی خاک میں پوشیدہ ہے وہ چنگاری

وجود انھی کا طواف بتاں سے ہے آزاد
یہ تیرے مومن و کافر، تمام زناری



English Translation:
مردان خدا

وہی ہے بندئہ حر جس کی ضرب ہے کاری
نہ وہ کہ حرب ہے جس کی تمام عیاری

GOD’S MEN
That man alone is brave and free, whose stroke is full of main and might that man is coward through and through who leans on guile and tricks in fight.
ازل سے فطرت احرار میں ہیں دوش بدوش
قلندری و قبا پوشی و کلہ داری

From creation’s Immemorial Dawn free born men own a bent of mind, Qalandar’s traits donning cloak and crown, such distinctive marks in them we find.
زمانہ لے کے جسے آفتاب کرتا ہے
انھی کی خاک میں پوشیدہ ہے وہ چنگاری

The spark lies hid within their clay which the world to itself takes transforms it as if by a smell and world – illuming sun it makes.
وجود انھی کا طواف بتاں سے ہے آزاد
یہ تیرے مومن و کافر، تمام زناری

This life is free from ugly taint that makes men round the fane to tread O God! The faithful and pagan all have worn on shoulders sacred thread.
(Translated by Syed Akbar Ali Shah)

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: