(Zarb-e-Kaleem-045) (محمد علی باب) Muhammad Ali Baab

محمد علی باب

تھی خوب حضور علما باب کی تقریر
بیچارہ غلط پڑھتا تھا اعراب سموات
اس کی غلطی پر علما تھے متبسم
بولا، تمہیں معلوم نہیں میرے مقامات
اب میری امامت کے تصدق میں ہیں آزاد
محبوس تھے اعراب میں قرآن کے آیات
باب کا نام محمد علی تھا اور اس نے مہدی ء موعود ہونے کا دعوی کیا تھا۔
اعراب: لفظی معانی روشن کرنا؛ اصطلاح میں عربی کے حروف تہجی کی حرکات ؛ یعنی زیر، زبر اور پیش۔

English Translation:

محمد علی باب

تھی خوب حضور علما باب کی تقریر
بیچارہ غلط پڑھتا تھا اعراب سموات
اس کی غلطی پر علما تھے متبسم
بولا، تمہیں معلوم نہیں میرے مقامات
اب میری امامت کے تصدق میں ہیں آزاد
محبوس تھے اعراب میں قرآن کے آیات
باب کا نام محمد علی تھا اور اس نے مہدی ء موعود ہونے کا دعوی کیا تھا۔
اعراب: لفظی معانی روشن کرنا؛ اصطلاح میں عربی کے حروف تہجی کی حرکات ؛ یعنی زیر، زبر اور پیش۔
MUHAMMAD ALI BAB
Before assembled Muslim priests, Bab made a speech with apt remarks that fellow could not read aright ‘Samawats’ with its syntactic marks.
The scholars smiled with contempt at stupid error that he made. He said with courage and aplomb, they knew not his spiritual grade.
The verses of the Holy Book by desinential marks were bound; they were ransomed and set free for sake of guidance true and sound.
(Translated by Syed Akbar Ali Shah)

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: