(Armaghan-e-Hijaz-09) (میری شاخ امل کا ہے ثمر کیا) Meri Shakh-e-Amal Ka hai Samar Kya

مری شاخ امل کا ہے ثمر کیا

مری شاخ امل کا ہے ثمر کیا
تری تقدیر کی مجھ کو خبر کیا
کلی گل کی ہے محتاج کشود آج
نسیم صبح فردا پر نظر کیا!

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: