(Armaghan-e-Hijaz-23) (موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام) Mout Hai Ek Sakht Ter Jis Ka Ghulami Hai Naam 

موت ہے اک سخت تر جس کا غلمی ہے نام

موت ہے اک سخت تر جس کا غلمی ہے نام
مکر و فن خواجگی کاش سمجھتا غلم!
مکر و فن خواجگی: آقاؤں کے فریب۔
شرع ملوکانہ میں جدت احکام دیکھ
صور کا غوغا حلل، حشر کی لذت حرام!
ملوکانہ : بادشاہوں کے قوامین۔ شرع
جدت: نیا پن۔
صور کا غوغا حلال: مراد ہے حکم ملنے پر اکٹھے ہونا حلال ہے۔
اے کہ غلمی سے ہے روح تری مضمحل
سینۂ بے سوز میں ڈھونڈ خودی کا مقام!
مضمحل: کمزور، ناتواں۔

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: