(Armaghan-e-Hijaz-27) (رندوں کو بھی معلوم ہیں صوفی کے کمالات) Rindon Ko Bhi Maloom Hain Sufi Ke Kamalat

رندوں کو بھی معلوم ہیں صوفی کے کمالت

رندوں کو بھی معلوم ہیں صوفی کے کمالت
ہر چند کہ مشہور نہیں ان کے کرامات

خود گیری و خودداری و گلبانگ انا الحق
آزاد ہو سالک تو ہیں یہ اس کے مقامات
انا الحق: میں حق ہوں۔
گلبانگ: خوشگوار۔
سالک: تصوف کی راہ کی منزلیں۔
سالک: مسافر۔
محکوم ہو سالک تو یہی اس کا ہمہ اوست
خود مردہ و خود مرقد و خود مرگ مفاجات!
ہمہ اوست: سب کچھ وہی ہے۔
مرقد: قبر۔
مرگ مفاجات: ناگہانی موت۔

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: