(Armaghan-e-Hijaz-41) (سر اکبر حیدری، صدر اعظم حیدرآباد دکن کے نام) Sir Akbar Haideri, Sadar-e-Azam Haiderabad Daccan Ke Naam

سر اکبر حیدری، صدراعظم حیدرآباد دکن کے نام

‘یوم اقبال’ کے موقع پر توشہ خانہ حضور نظام کی طرف سے، جو صاحب صدراعظم کے ماتحت ہے ایک ہزار روپے کا چیک بطور تواضع وصول ہونے پر
تھا یہ اللہ کا فرماں کہ شکوہ پرویز
دو قلندر کو کہ ہیں اس میں ملوکانہ صفات

مجھ سے فرمایا کہ لے، اور شہنشاہی کر
حسن تدبیر سے دے آنی و فانی کو ثبات
آنی: لمحہ بھر کے لیے۔
فانی: مٹ جانے والا۔
میں تو اس بار امانت کو اٹھاتا سر دوش
کام درویش میں ہر تلخ ہے مانند نبات
بار امانت: امانت کا بوجھ۔
سر دوش: کندھوں پر۔
کام درویش: درویش کا حلق۔
مانند نبات: مصری کی طرح۔
غیرت فقر مگر کر نہ سکی اس کو قبول
جب کہا اس نے یہ ہے میری خدائی کی زکات!

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: