(Bang-e-Dra-112) (رام) Raam

رام

لبریز ہے شراب حقیقت سے جام ہند
سب فلسفی ہیں خطہء مغرب کے رام ہند

یہ ہندیوں کے فکر فلک رس کا ہے اثر
رفعت میں آسماں سے بھی اونچا ہے بام ہند
فکر فلک رس: آسمان پر پہنچنے والا خیال ۔
بام ہند: ہند کی چھت، مراد ہے ہمالیہ پہاڑ۔
اس دیس میں ہوئے ہیں ہزاروں ملک سرشت
مشہور جن کے دم سے ہے دنیا میں نام ہند
ملک سرشت: فرشتہ خصلت۔
ہے رام کے وجود پہ ہندوستاں کو ناز
اہل نظر سمجھتے ہیں اس کو امام ہند

اعجاز اس چراغ ہدایت کا ہے یہی
روشن تر از سحر ہے زمانے میں شام ہند
روشن تر از سحر: صبح سے زیادہ روشن۔
تلوار کا دھنی تھا، شجاعت میں فرد تھا
پاکیزگی میں، جوش محبت میں فرد تھا

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: