(Bal-e-Jibril-022) (امین راز ہے مردان حر کی درویشی) Amin-e-Raaz Hai Mardan-e-Hur Ki Darvaishi

امین راز ہے مردان حر کی درویشی

امین راز ہے مردان حر کی درویشی
کہ جبرئیل سے ہے اس کو نسبت خویشی
نسبت خويشي: عزیزداری کا رشتہ۔
کسے خبر کہ سفینے ڈبو چکی کتنے
فقیہ و صوفی و شاعر کی نا خوش اندیشی
نا خوش انديشي: بری باتیں سوچنے کی عادت۔
نگاہ گرم کہ شیروں کے جس سے ہوش اڑ جائیں
نہ آہ سرد کہ ہے گوسفندی و میشی
گوسفندي و ميشي: بھیڑ بکریوں کی سی۔
طبیب عشق نے دیکھا مجھے تو فرمایا
ترا مرض ہے فقط آرزو کی بے نیشی
آرزو کي بے نيشي: آرزو کا نہ ہونا۔
وہ شے کچھ اور ہے کہتے ہیں جان پاک جسے
یہ رنگ و نم، یہ لہو، آب و ناں کی ہے بیشی

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: