(Bal-e-Jibril-067) (کی حق سے فرشتوں نے اقبال کی غمازی) Ki Haq Se Farishton Ne Iqbal Ki Ghamazi

کی حق سے فرشتوں نے اقبال کی غمازی

کی حق سے فرشتوں نے اقبال کی غمازی
گستاخ ہے، کرتا ہے فطرت کی حنا بندی

خاکی ہے مگر اس کے انداز ہیں افلاکی
رومی ہے نہ شامی ہے، کاشی نہ سمرقندی

سکھلائی فرشتوں کو آدم کی تڑپ اس نے
آدم کو سکھاتا ہے آداب خداوندی!

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: