(Bal-e-Jibril-082) (خودی کی خلوتوں میں گم رہا میں) Khudi Ki Khalwaton Mein Gum Raha Main

خودی کی خلوتوں میں گم رہا میں

خودی کی خلوتوں میں گم رہا میں
خدا کے سامنے گویا نہ تھا میں
نہ دیکھا آنکھ اٹھا کر جلوہ دوست
قیامت میں تماشا بن گیا میں!

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: