(Bal-e-Jibril-109) (خرد واقف نہیں ہے نیک و بد سے) Khirad Waqif Nahin Hai Naik-o-Bad Se

خرد واقف نہیں ہے نیک و بد سے

خرد واقف نہیں ہے نیک و بد سے
بڑھی جاتی ہے ظالم اپنی حد سے
خدا جانے مجھے کیا ہو گیا ہے
خرد بیزار دل سے، دل خرد سے!

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: