(Bal-e-Jibril-118) (قطعہ – اقبال نے کل اہل خیابان کو سنایا) Qataa – Iqbal Ne Kal Ahl-e-Khiyaban Ko Sunaya

قطعہ

اقبال نے کل اہل خیاباں کو سنایا
یہ شعر نشاط آور و پر سوز طرب ناک
میں صورت گل دست صبا کا نہیں محتاج
کرتا ہے مرا جوش جنوں میری قبا چاک

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: