(Bal-e-Jibril-154) (خوشحال خان کی وصیت) Khushal Khan Ki Wasiyat

خوشحال خاں کی وصیت

قبائل ہوں ملت کی وحدت میں گم
کہ ہو نام افغانیوں کا بلند

محبت مجھے ان جوانوں سے ہے
ستاروں پہ جو ڈالتے ہیں کمند

مغل سے کسی طرح کمتر نہیں
قہستاں کا یہ بچہء ارجمند
قہستاں: افغانستان کا ایک پہاڑی علاقہ۔
کہوں تجھ سے اے ہم نشیں دل کی بات
وہ مدفن ہے خوشحال خاں کو پسند

اڑا کر نہ لائے جہاں باد کوہ
مغل شہسواروں کی گرد سمند!
گرد سمند: دوڑتے ہوئے گھوڑوں کی اڑائی ہوئی گرد۔

%d bloggers like this:
search previous next tag category expand menu location phone mail time cart zoom edit close