(Bal-e-Jibril-169) (فلسفی) Falsafi

فلسفی

بلند بال تھا، لیکن نہ تھا جسور و غیور
حکیم سر محبت سے بے نصیب رہا
پھرا فضاوں میں کرگس اگرچہ شاہیں وار
شکار زندہ کی لذت سے بے نصیب رہا
بال: اونچا اڑنے والا۔ بلند
جسور و غيور: جسارت والا ۔
کرگس: گدھ۔

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: