(Bang-e-Dra-160) (دریوزہ خلافت) Daryuza’ay Khilafat

دریوزہ خلافت

اگر ملک ہاتھوں سے جاتا ہے، جائے
تو احکام حق سے نہ کر بے وفائی

نہیں تجھ کو تاریخ سے آگہی کیا
خلافت کی کرنے لگا تو گدائی

خریدیں نہ جس کو ہم اپنے لہو سے
مسلماں کو ہے ننگ وہ پادشائی

مرا از شکستن چناں عار ناید
کہ از دیگراں خواستن مومیائی
میرے لیے اپنے جسم کی ہڈیاں ٹوٹ جانا اس قدر باعث شرم نہیں، جس قدر دوسروں کے سامنے مومیائی کے لیے ہاتھ پھیلا نا ۔

Comments are closed.

Blog at WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: