(Rumuz-e-Bekhudi-18) (پختگی سیرت ملیہ از اتباع آئین الہیہ است) Dar Ma’ani Aynke Pukhtagi Seerat Milya Az Itba’a Ayin Elahia Ast

پختگی سیرت ملیہ از اتباع آئین الہیہ است   در معنی اینکہ پختگی سیرت ملیہ از اتباع آئین الہیہ است در شریعت معنی دیگر مجو غیر ضو در باطن گوھر مجو اس مضمون کی وضاحت میں کہ کردار کی پختگی شریعت کے اتباع سے ہے۔   شریعت میں کوئی اور معنی نہ ڈھونڈ؛ گوہر کے... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-17) (در زمانۂ انحطاط تقلید از اجتہاد اولی تراست) Dar Ma’ani Aynke Dar Zamana Intihat Taqleed Az Ijtihad Aula Tar Ast

در زمانۂ انحطاط تقلید از اجتہاد اولی تراست   در معنی اینکہ در زمانۂ انحطاط تقلید از اجتہاد اولی تراست عہد حاضر فتنہ ہا زیر سر است طبع ناپروای او آفت گر است اس مضمون کی وضاحت میں کہ انحطاط کے دور میں تقلید اجتحاد سے بہتر ہے۔   موجودہ دور اپنے اندر بہت سے... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-16) (در معنی اینکہ نظام ملت غیر ازئین) Dar Ma’ani Aynke Nizam -e-Millat Ghair Az Aain Soorat

در معنی اینکہ نظام ملت غیر ازئین صورت نبنددوئین ملت محمدیہ قرآن است ملتی را رفت چون آئین ز دست مثل خاک اجزای او از ہم شکست اس مضمون کی وضاحت میں کہ ملت کا نظام آئین کے بغیر قائم نہیں ہو سکتااور ملت محمدیہ کا آئین قرآن پاک ہے۔    جب کسی ملت کے... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-15) (در معنی اینکہ ملت محمدیہ نہایت زمانی ہم ندارد) Dar Ma’ani Aynke Millat-e-Muhammadia Nihayat-e-Zamani Hum Nadarad

در معنی اینکہ ملت محمدیہ نہایت زمانی ہم ندارد   در معنی اینکہ ملت محمدیہ نہایت زمانی ہم ندارد کہ دوام این ملت شریفہ موعود است در بہاران جوش بلبل دیدہ ئی رستخیز غنچہ و گل دیدہ ئی اس مضمون کی وضاحت میں کہ ملّت محمدیہ (صلعم) حدود زماں سے آزاد ہے کہ اس ملّت... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-14) (در معنی اینکہ وطن اساس ملت نیست) Dar Ma’ani Aynke Watan Asas-e-Millat Ast

در معنی اینکہ وطن اساس ملت نیست   آنچنان قطع اخوت کردہ اند بر وطن تعمیر ملت کردہ اند اس مضمون کی وضاحت میں کہ ملّت اسلامیہ کی بنیاد وطن نہیں۔   اہل مغرب نے اس طرح اخوت کی جڑ کاٹی ہے کہ وطن کی بنا پر قوم کی تعمیر ہے۔ تا وطن را شمع... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-13) (در معنی اینکہ چون ملت محمدیہ) Dar Ma’ani Aynke Chun Millat-e-Muhammadia Mosas Bar Touheed Wa Risalat

در معنی اینکہ چون ملت محمدیہ موسس بر توحید و رسالت است پس نہایت مکانی ندارد (اس مضمون کی وضاحت میں کہ چونکہ ملّت محمدیہ (صلعم) کی بنیاد توحید و رسالت پر ہے اس لیے یہ مکان کی حدود سے ماورا ہے۔)     جوہر ما با مقامی بستہ نیست بادہ ی تندش بجامی بستہ... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-11) (حکایت سلطان مراد و معمار) Hikayat-e-Sultan Murad Wa Ma’amar Dar Ma’ani Masawat-e-Islamia

علامہ اقبال نے بہت ہی خوبصورت انداز میں قرآن کے عدل و انصاف کے قانون کو ایک تاریخی حکایت کی روشنی میں واضح کیا ہے، کہ کس طرح قرآن کے عدل و انصاف کے قانون پر عمل کرکے کے امت محمدیہ ﷺ میں مساوات قائم کی جاسکتی ہے۔ حکایت سلطان مراد و معمار (حکایت سلطان... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-10) (حکایت بوعبیدو جابان در معنی اخوت اسلامیہ) Hikayat-e-Bu Ubaid Wa Jaban Dar Ma’ani Akhuwat-e-Islamia

حکایت بوعبیدو جابان در معنی اخوت اسلامیہ (بو عبید (رحمتہ) اور جابان کی حکایت اخوت اسلامیہ کے بارے میں۔) شد اسیر مسلمی اندر نبرد قائدی از قائدان یزد جرد (جنگ کے دوران یزد جرد کے سپہ سالاروں میں سے ایک سپہ سالار مسلمان کے ہاتھوں قیدی بن گیا۔) گبر باران دیدہ و عیار بود حیلہ... Continue Reading →

(Rumuz-e-Bekhudi-07) (حکایت شیر و شہنشاہ عالمگیر) Hikayat-e-Sher-o-Shehanshah Alamgeer Ramatullah Alaih

حکایت شیر و شہنشاہ عالمگیر رحمةاﷲ علیہ (شہنشاہ عالمگیر (رحمتہ) اور شیر کی کہانی۔) شاہ عالمگیر گردون آستان اعتبار دودمان گورگان (آسمان مرتبت شہنشاہ عالمگیر جو خاندان تیمور کے لیے باعث فخر ہے۔) پایہ ی اسلامیان برتر ازو احترام شرع پیغمبر ازو اس کی وجہ سے مسلمانوں کی توقیر بڑھی ؛ اس کے دور میں... Continue Reading →

Blog at WordPress.com.

Up ↑